343

سجاول :بیلو شہر میں سرکاری ڈاکٹر کی نجی کلینک میں غلط انجیکیشن لگنے کے باعٹ 11 سالہ لڑکی تڑپ تڑپ کے فوت

سجاول کےعلاقہ بیلو تہانہ حدود کے نواحی گاؤں محمد ملاح کے رہائشی نظیر ملاح کی صاحبزادی 11 مسمات فریدہ کو معمولی تکلیف کے باعث بیلو شہر کے بیسک ہیلتھ سینٹرپر تعینات ڈاکٹر انور میمن کی اپنی نجی کلینک پر علاج کیلئے لایا گیا جہاں پر مذکورہ ڈاکٹر کی جانب سے مریضہ کو جلدی جلدی میں غلط انجیکشن دیکر اور اپنی فیس وصول کرکے واپس روانہ کر دیا ڈاکٹر کی غلط انجیکشن کے باعث 11 سالہ فریدہ ملاح کی تبیعت اور بھی خراب ہوگئی اور گہر پہنچنے سے قبل راستے میں ہی تڑپ تڑپ کر فوت ہوجانے کے بعد ورثہ کی جانب سے اسکو مزید طبعی امداد کیلئے سول اسپتال سجاول پہنچایا گیا جہاں پر لیڈی ڈاکٹر شہناز خواجہ نے اسکے موت کی تصدیق کرتے ہوئے ضروری کاروائی کے بعد نعش کفن دفن کیلئے ورثہ کے حوالے کی گئی اس موقع مرحومہ کے والد نظیر ملاح و دیگر نے ڈاکٹر انور میمن کی غفلط کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے اسکی فل فورن گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے انصاف کی مانگ کی گئی جبکہ آخری اطلاع تک واقعہ کا کوئی مقدمہ درج نہ ہوسکا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں